چین میں کورونا وائرس کےکیسز میں اضافہ

چین میں شہری حکومت نے عوام سے بلا ضرورت گھروں سے باہر نہ نکلنے کی اپیل کر دی، مختلف شہروں میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا

(ویب ڈسک) چین میں کورونا وائرس کے کیسز میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، 2 افراد کورونا وائرس کا شکار ہو کر ہلاک ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق چین میں ایک بار پھر کورونا وائرس کا پھیلاؤ تیز ہو گیا۔بتایا گیا ہے کہ 28 ہزار سے زائد کورونا کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ چین میں شہری حکومت نے عوام سے بلا ضرورت گھروں سے باہر نہ نکلنے کی اپیل کر دی۔
حکومت دارالحکومت بیجنگ میں اسکولوں ، پارکوں اور میوزیمز سب بند کر دئیے ہیں۔شنگھائی آنے والوں کی بھی سخت چیکنگ کی جا رہی ہے۔چینی حکام کے مطابق دو روز میں رپورٹ ہونے والے کیسز اپریل کے بعد رپورٹ ہونے والے کیسز کی سب سے بڑی تعداد ہے جن میں نصف سے زیادہ کیسز گوانگ ژو اور چونگ کنگ میں رپورٹ ہوئے۔جب کہ بیجنگ میں یومیہ کیسز کی تعداد ببی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔
20 نومبر کو چین میں 6 ماہ بعد کورونا وائرس سے پہلی ہلاکت رپورٹ ہوئی ہوئی تھی۔غیرملکی خبر ایجنسی کے مطابق دارالحکومت بیجنگ میں 87 سال کے شخص کی کورونا سے موت رپورٹ ہوئی تھی۔21 نومبر کو بھی بیجنگ میں مزید 2 مریض کورونا وائرس کا شکار ہو کر چل بسے تھے۔چائنا نیشنل ہیلتھ کمیشن کے مطابق 81 سالہ خاتون اور 88 سالہ شخص اس بیماری کا شکار ہو کر چل بسے۔
کمیشن نے بتایا دونوں میں کورونا کی علامات کی معتدل شدت کی تشخیص ہوئی تھی مفر وہ پہلے سے مختلف امراض کا سامنا کر رہے تھے۔نیشنل کمیشن ہیلتھ کمیشن کی جانب سے 21 نومبر کو 27 ہزار سے زیادہ نئے کیسز کی تصدیق کی گئی تھی۔گذشتہ 5 روز سے روزانہ 20 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہو رہے ہیں جس کے باعث مختلف شہروں میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا ہے۔حکومت کی جانب سے شہریوں سے بلا ضرورت گھروں سے باہر نہ نکلنے کی اپیل بھی کی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں