کراچی میں پل بھی خطرناک ہوگئے، فلائی اوورز بھی عوام کے لیے وبال جان

کراچی میں پرسکون سفر کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، شہر کے فلائی اوورز بھی عوام کے لیے وبال جان بن گئے۔

کراچی میں فلائی اوورز میں پڑے گڑہوں کی وجہ سے حادثات معمول بن گئے، بلوچ کالونی پر گڑھے کی وجہ سے رکشے کا ٹائر نکل گیا، شہری نے انتظامیہ کی بے حسی کی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر شیئر کردی۔

ماڈل کالونی کی سڑک کی بھی 5 جنوری گزر جانے کے باوجود مرمت نہ ہوسکی، جہانگیر روڈ کی سڑک کھنڈر بن گئی، حادثات روز کا معمول بن گئے۔

مزار قائد کے قریب سڑک پر بھی بڑے گڑھے پڑ گئے ہیں، لیاقت آباد ڈاکخانے کی بات کی جائے تو وہاں بھی ٹوٹی سڑک کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر رہتی ہے۔

سائٹ ایریا کے علاقے میں بھی سڑکوں کی بدحالی کی وجہ سے ٹریفک جام ہوتا ہے اور شہری منٹوں کا سفر گھنٹوں میں طے کرنے پر مجبور ہوجاتے ہیں۔

دوسری جانب ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب کا کہنا ہے کہ سڑکوں کی مرمت کا کام جاری ہے، مرمت کے لیے ٹینڈر ہوگئے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں