پاسپورٹ کی درجہ بندی جاری ،پاکستانی پاسپورٹ شمالی کوریا، صومالیہ اور یمن سے بھی نیچے

پاسپورٹ کی درجہ بندی جاری کرنے والی تنظیم ہینلے اینڈ پارٹنرز نے 2022 کے لیے ہینلے پاسپورٹ انڈیکس جاری کردیا جس میں جاپان اور سنگاپور ایک بار پھر دنیا کے طاقتور ترین پاسپورٹ قرار پائے ہیں۔

جاپان اور سنگاپور کا پاسپورٹ رکھنے والے شہری بغیر ویزا کے 192 ممالک کا سفر کر سکتے ہیں جب کہ طاقتور ترین پاسپورٹ میں جرمنی اور جنوبی کوریا دوسرے نمبر پر ہیں اور وہاں کے شہری 190 ممالک کا سفر بغیر ویزا کے کر سکتے ہیں۔

بھارتی پاسپورٹ 83ویں پوزیشن پر ہے، بھارت کے شہری 60 ممالک کا ویزا فری سفر کر سکتے ہیں۔

پاکستانی پاسپورٹ شمالی کوریا، صومالیہ اور یمن سے بھی نیچے

انڈیکس میں پاکستان شمالی کوریا، صومالیہ اور یمن سے بھی نیچے 108ویں نمبر ہے۔ پاکستان کے شہری صرف 31 ممالک میں ویزا فری سفر کر سکتے ہیں، رینکنگ میں شمالی کوریا کا پاسپورٹ 104 ویں، صومالیہ کا 106 ویں اور یمن کا 107 ویں نمبر پر ہے، پاکستان کے بعد شام 109، عراق 110 اور افغانستان 111 ویں نمبر پر ہے۔

بھارتی پاسپورٹ 83 ویں پوزیشن پر ہے اور بھارت کے شہری 60 ممالک کا ویزا فری سفر کرسکتے ہیں۔

درجہ بندی کا تعین کیسے کیا جاتا ہے؟
یہ درجہ بندی ہر سال کے شروع میں جاری کی جاتی ہے اور اس کے بعد اسے ہر 3 ماہ بعد اپ ڈیٹ کیا جاتا ہے۔

ہینلے پاسپورٹ ویزا انڈیکس کی ویب سائٹ کے مطابق ریئل ٹائم ڈیٹا کو سال بھر میں اپ ڈیٹ کیا جاتا ہے اور اس میں ویزا پالیسی میں تبدیلیوں کو بھی مدنظر رکھا گیا ہے۔

یہ ڈیٹا انٹرنیشنل ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن (IATA) سے لیا گیا ہے۔

درجہ بندی کا فیصلہ اس بنیاد پر کیا جاتا ہے کہ کسی ملک کا پاسپورٹ رکھنے والا پہلے ویزا حاصل کیے بغیر کتنے دیگر ممالک کا سفر کر سکتا ہے، یعنی سفر کے لیے انہیں پہلے سے ویزا حاصل کرنے کی ضرورت نہیں ہوتی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں