کچھ بھی نہ کرکے پیسہ کمانے والے شخص سے ملیے

دنیا میں مختلف طرح کے نکمے اور کاہل انسان پائے جاتے ہیں لیکن اس نکمے پن اور کاہلی پر انہیں لوگوں کی جانب سے صرف باتیں ہی سننے کو ملتی ہیں لیکن جاپان میں ایک شخص ایسا بھی ہے جو کچھ نہ کرکے پیسے کماتا ہے۔

ٹوکیو سے تعلق رکھنے والے 38 سالہ شوجی موریموٹو کچھ نہ کرنے پر اپنی خدمات کرائے پر دیتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق یہ جاپانی شہری لوگوں کے لیے کچھ نہ کرکے پیسہ کماتا ہے، اس کی خدمات صرف اس لیے لی جاتی ہیں جس میں اگر کوئی شخص تنہا لنچ یا ڈنر کررہا ہو، یا سفر کررہا ہو، تو شوجی اسے پاس بیٹھا دیکھتا رہے تاکہ اس شخص کو تنہائی کا احساس نہ ہو۔

شوجی نے 2018 میں ملازمت چھوٹ جانے کے بعد ’کرائے پر کچھ نہ کرنے والا شخص دستیاب‘ کے نام سے ٹوئٹر ہینڈل بنایا۔

رپورٹ کے مطابق اس سروس کو متعارف کرانے کے بعد اب تک 3000 لوگ اس سے رابطہ کرچکے ہیں جن میں باقاعدگی سے روزانہ 2 سے 3 لوگوں کا اضافہ ہوتا ہے جو شوجی کو کھانے اور سفر کے لیے کچھ نہ کرنے اور صرف پاس بیٹھنے کا معاوضہ دیتے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شوجی کا کہنا تھا کہ وہ کچھ نہ کرکے اپنی خدمات کا معاوضہ وصول کرتا ہے جس کے لیے اسے کوئی خاص جدوجہد نہیں کرنی پڑتی، وہ بات چیت نہیں کرتا، اس کے برعکس چٹ چاٹ پر ردعمل کا اظہار کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں