چاند پر موجود پُراسرار جھونپڑی کا راز فاش

چینی خلائی گاڑی نے چاند پر موجود پُراسرار جھونپڑی کی حقیقت کا پتہ لگالیا، سائنس دانوں نے پُراسرار شے کی تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کردیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سنہ 2019 سے چاند پر موجود چینی خلائی گاڑی “یوٹو 2 روور” نے دسمبر 2020 میں چاند کے شمالی حصّے میں پُراسرار شے (جھونپڑی یا گھر) کی تصویر کیمرے میں محفوظ کی ہے، جسے دیکھ کر سائنسدان حیرت زدہ رہ گئے تھے۔

ایک ماہ کی مسلسل جدوجہد اور تحقیق کے بعد چینی سائنس دانوں اس پُراسرار شے کا راز جان لیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق چاند پر نظر آنے والی پُراسرار شے دراصل ایک بڑی چٹان تھی جو دور سے جھونپڑی یا گھر نما نظر آرہا تھا، یوٹو 2 روور نے چٹان کی تصاویر بھی ارسال کردیں۔

پہلی تصویر میں بہت دور ہونے کی وجہ سے یہ چٹان زیادہ بڑی اور زیادہ پراسرار لگی تھی مگر اس کے قریب جانے پر روور اس کی حقیقت جاننے میں کامیاب ہوا۔

چینی ماہرین نے چٹان کی ساخت دیکھتے ہوئے اسے جیڈ ریبٹ سے تشبیہ دی ہے کیوں کہ وہ کسی خرگوش کی طرح نظر آرہی ہے۔

خیال رہے کہ چینی خلائی گاڑی یو ٹو 2 روور چاند کے تاریک حصّے پر اترنے والی دنیا کی پہلی خلائی گاڑی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں